راولاکوٹ :یونیورسٹی آف پونچھ کے طلبا وطالبات عدم تحفظ کاشکار، غنڈہ گرد عناصر کی یونیورسٹی کیمپس میں آئے روز مداخلت ،طلبا کو تشدد کا نشانہ بنائے جانے کے خلاف طلبا وطالبات سڑکوں پر نکل آئے ،راولپنڈی راولاکوٹ مین شاہراہ پرٹائر جلا کرشدید احتجاج کیا گیا،گھنٹوں ٹریفک جام رہی مسافروں کو مشکلات کا سامنا انتظامیہ کی یقین دہانی پر احتجاج موخر ۔

0
340
راولاکوٹ) راولاکوٹ یونیورسٹی آف پونچھ کے طلبا وطالبات عدم تحفظ کاشکار طلبا نے مبعینہ الزام عائد کیا ہے کہ غنڈہ گرد عناصر کی یونیورسٹی کیمپس میں آئے روز مداخلت طلبا ء پر تشددطالبات کو ہراساں کیا جانے لگا پانچ طلبا کو غنڈہ گرد عناصر نے تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے زخمی کردیا جامعہ کیمپس میں پرائیویٹ اوباش نوجوانوں کی مداخلت طلبا کو تشدد کا نشانہ بنائے جانے کے خلاف طلبا وطالبات سڑکوں پر نکل آئے راولپنڈی راولاکوٹ مین شاہراہ بند کرکے رکاوٹیں کھڑی کرکے ٹائر جلا کرشدید احتجاج کرتے رہے گھنٹوں ٹریفک جام رہی طلباء طالبات کا کہنا تھا کے وائس چانسلر سے لے کر چوکیدار تک وطلبہ عدم تحفظ کا شکار ہیں طلبہ کو یونیورسٹی کی عمارت ہاسٹل ٹرانسپورٹ اور سیکیورٹی کی حالت میسر نہیں اس طرح طلباء وطالبات عدم تحفظ کا شکار ہیں مقامی غنڈہ گرد عناصر فیروز حیدر اسامہ عازب عاصم کامران وغیرہ جن کو ارشد نیازی نامی بااثر شخصیت کی آشیرباد حاصل ہے آئے روز کیمپس میں آکر ایسے عناصر شر پسندی کرتے ہیں جس سے طلبا وطالبات محفوظ نہیں ہیں ان عناصر کے سامنے یونیورسٹی انتظامیہ بھی بے بس ہے ایسے حالات میں تعلیم حاصل کرنا طلباوطالبات کے لئے مشکل تر ہوتا جارہا ہے حکومت پاکستان اور آزادکشمیر نوٹس لیں تاکہ تعلیمی ادارہ شر پسندی سے آزاد ہو اور نئی نسل تعلیم سے آراستہ ہوسکے طلبا کا کہنا ہے کہ چونکہ ہمارا تعلق پاکستان و آزادکشمیر کے مختلف علاقوں سے ہے مقامی شر پسند عناصر تعلیم دشمنی پر اتر آئے ہیں ہمیں تعلیمی اداروں میں تحفظ چاہئے تاکہ ہم پرامن ماحول میں تعلیم حاصل کرسکیں تاہم پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے اسسٹنٹ کمشنر پونچھ عثمان ممتاز نے ڈی ایس پی سردار ظفرخان ایس ایچ او اعجاز خان ودیگر نے احتجاج کرنے والے طلبہ سے مذاکرات کئے اور صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملزمان کے خلاف ہرممکن کاروائی کی جائے گی اور طلبہ کو تحفظ فراہم کرنا ہماری اولین ذمہ داری ہے جس پر طلبہ نے احتجاج مؤخر ۔ ۔ کردیا 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here