راولاکوٹ :شادیانوں کی جگہ ماتم ،تراڑ کھل میں23سالہ نوجوان کی موت کا غم نانی برداشت نہ کر تے چل بسی دونوں کی نماز جنازہ ایک ساتھ ادا کی گئی علاقے کی فضاء سوگوار

0
534
راولاکوٹ( بیورو رپورٹ ) شادیانوں کی جگہ ماتم ،تراڑ کھل میں23سالہ نوجوان کی موت کا غم نانی برداشت نہ کر تے چل بسی دونوں کی نماز جنازہ ایک ساتھ ادا کی گئی علاقے کی فضاء سوگوار ۔تفصیلات کے مطابق تراڑ کھل کے گاؤں مرشد آباد سے تعلق رکھنے والا23سالہ نوجوان افراز احمد جسکی شادی 21,22نومبر کو طے تھی گزشتہ روز کراچی سے اسکی ڈیڈ باڈی اپنے آبائی گاؤں مرشد آباد تراڑ کھل میں پہنچی بتایا جاتا ہے کہ افراز احمد نے خود کشی کر لی یہ خبر سنتے ہی افراز کی نانی جی کو ہارٹ اٹیک آیا اور انکی سانسیں بھی ہمیشہ ہمیشہ کے لیئے رک گئیں دونوں نانی اور نواسے کی نماز جنازہ ایک ساتھ ادا کی گئی اور ایک ساتھ دونوں کو قبروں کے حوالے کر دیا گیا ذرائع کا کہنا ہے کہ افراز کراچی میں تھا جب سے اس کی امی فوت ہوئی تھیں اسے نانی نے ہی پال پوس کر جوان کیا پڑھایا اور اس کے کہنے پر اسکی شادی کے لیئے رشتہ کیا اس کی شادی اسی ماہ کی اکیس اور بائیس کو طے کی گئی تمام تیاریاں مکمل تھیں زیور کپڑا دیگر تمام تیاریاں مکمل ہوچکی تھیں اب نانی اس کا انتظار کر رہی تھیں چند ہی دنوں میں اس نے کراچی سے گھر واپس آنا تھا اور گھر میں شادیانے بجنے تھے جبکہ اسکی موت کی اطلاع آ گئی وہ بھی خود کشی کی جوں ہی اسکی نانی جی نے سنا ان کو فوراً ہارٹ اٹیک آیا اور وہ اللہ کو پیاری ہو گئیں اس طرح دونوں کی نماز جنازہ ایک ساتھ ادا ہوئی اور قبریں بھی ایک ساتھ کی گئیں 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here