راولاکوٹ :ظلم کی ایک اورداستان رقم ماں بیٹی کو مار مار کر لہو لہان کر ڈالا ماں بیٹی کی چیخ و پکار پولیس کی کاروائی ایک گرفتار دیگر ملزمان موقع سے فرار

0
424

راولاکوٹ ( بیورو رپورٹ ) ظالم پڑوسیوں نے اکیلی ماں بیٹی پر دھاوا بول دیا ،مار مار کر لہو لہان کر ڈالا ، خون سے لت پت خواتین تھانے پہنچ گئیں ،مقدمہ درج ایک ملزم گرفتار باقی ملزمان کی گرفتاری کے لیئے پولیس کے چھاپے ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز سٹی تھانہ راولاکوٹ کی حدودچہڑہ نکہ میں محمد شہزاد قاضی ،شاہ میر قاضی ، شاہنواز ،احسن شہزاد اور شیر یار شہزاد نے نہتی اکیلی خواتین جو اپنے گھر میں بیٹھی اپنے کام کاج میں مصروف تھیں پر اچانک دھاوا بول دیا اور مار مار کر لہو لہان کر دیا ان اشخاص نے لاتوں مکوں ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال کیا مار پیٹ کا یہ سلسلہ کافی دیر جاری رہا ماں بیٹی کی چیخ و پکار سن کر کسی نے پولیس کو اطلاع کی جس پر پولیس بروقت موقع پر پہنچ گئی باقی ملزمان پولیس کو دیکھ کرفرار ہو گئے جبکہ محمد شہزاد کو پولیس نے موقع سے گرفتار کر لیا پولیس نے مقدمہ درج کر کے تفتیش سروع کر دی اور دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیئے چھاپے بھی مار رہی ہے مضرو ب شائدہ کا کہنا ہے کہ مین ملزم شہزاد پونچھ یونیورسٹی میں ملازم ہے اور مفرور ملزمان میں سے ایک ملزم شاہ میرنے سابق صدر حاجی یعقوب کی ایماء پر پونچھ یونیورسٹی میں ملازمت لے رکھی ہے اور با اثر ہونے کی وجہ سے معاملے پر اثر انداز بھی ہو رہا ہے ان کا کہنا ہے کہ شہزاد مجھے قتل کر کے میرے بچوں کو یہاں سے بھگانے اور گھر و زمین پر قبضہ کرنا چاہتا ہے انہوں نے ارباب اختیار سے نوٹس لیتے ہوئے جان و مال کی حفاظت کو یقینی بنانے کی استدعا کی ہے ۔ 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here